Categories
Breaking news

تحریک عدم اعتمادکیس، سپریم کورٹ نے آج کوئی مناسب حکم جاری کرنے کا عندیہ دیدیا

تحریک عدم اعتمادکیس، سپریم کورٹ نے آج کوئی مناسب حکم جاری کرنے کا عندیہ دیدیا

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) سپریم کورٹ نے کہا ہے کہ آج ہم کوئی مناسب حکم جاری کریں گے ، پہلے درخواست گزاروں کو سننا چاہتے ہیں، دیگر کسی کیس کو آج نہیں سن رہے ، صرف اسمبلی کی کارروائی کو ہی دیکھیں گے، فل کورٹ کی وجہ سے دیگر تمام مقدمات متاثر ہوئے، اگر بینچ پر کسی کو اعتراض ہے تو ہم اٹھ کر چلے جاتے ہیں، عدالت کوتعین کرنےدیں کہ کونساسوال کتنااہم ہے، آپ بتاناپسندکریں گےکہ کونسےآئینی سوالات پرفل کورٹ کی ضرورت ہے؟عدالت بریکنگ:- اگرآپ کوکسی پرعدم اعتمادہےتوبتادیں،ہم اٹھ جاتےہیں، جوکچھ قومی اسمبلی میں ہوااس کی آئینی حیثیت کاجائزہ لیناہے، وہ تحریک عدم اعتماد پرڈپٹی اسپیکرکی رولنگ کیخلاف ازخودنوٹس کی سماعت کررہے تھے۔

پنجاب میں نئے وزیراعلیٰ کا تقرر، سپریم کورٹ نے ہدایات جاری کردیں

دوران سماعت پاکستان تحریک انصاف کے وکیل ڈاکٹر بابر اعوان نے کہا ہے کہ عدالت میں 2 باتیں کرناچاہتاہوں،عدالت کے 21 مارچ کےحکم کی جانب توجہ مبذول کراناچاہتاہوں، 21 مارچ کوسپریم کورٹ بارکی درخواست پر 2 رکنی بنچ نےحکمنامہ جاری کیاتھا۔ انہوں نے کہا کہ کل پارٹی کی ہدایات نہیں لی تھیںِ،عمران خان نے بتایا کہ جلدی الیکشن کے لیے تیار ہیں، سارا مسئلہ ہی جلدی الیکشن پر تھا، اٹارنی جنرل نے سپریم کورٹ کو یقین دہانی کرائی تھی کہ کسی رکن اسمبلی کو آنے سے نہیں روکا جائے گا، جو کچھ بھی ہوا سب ریکارڈ پر لانا چاہتے ہیں ، اس پر چیف جسٹس عمرعطابندیال نے کہاکہ یہ سیاسی بیان ہے، آج ہم کوئی مناسب حکم جاری کریں گے۔عدالت عظمیٰ نے کہا کہ ہمارے سامنے در درخواستیں اور از خود نوٹس ہے ، اگر کوئی سٹیٹمنٹ دینا ہے تو دے دے ۔

پنجاب اسمبلی اجلاس کے دوران خواتین ارکان اسمبلی میں جھگڑے کی ویڈیو سامنے آگئی

دوران سماعت پیپلزپارٹی کےوکیل فاروق نائیک کی فل کورٹ بنچ بنانےکی استدعا کردی اور موقف اپنایا کہ عدالت پربوجھ نہیں بنناچاہیئے۔

گذشتہ روز عدالت نے کسی بھی ماورائے آئین اقدام سے روکتے ہوئے صدر، وزیراعظم، تمام سیاسی جماعتوں، سپیکر، ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی، اٹارنی جنرل، سیکرٹری داخلہ، دفاع، پنجاب کے آئینی بحران پر ایڈووکیٹ جنرل اور سپریم کورٹ بار کو نوٹس جاری کئے تھے۔چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ رمضان ہے سب نے روزہ رکھا ہے، تمام ادارے آئینی حدود کے مطابق کردار ادا کریں، تمام سیاسی قوتیں اور ریاستی حکام صورتحال کا فائدہ نہ اٹھائیں، معاملہ پر دائر درخواستوں کو رجسٹرڈ کیا جاتا ہے، امن و امان کی صورتحال خراب نہیں ہونی چاہیے، تمام سیاسی جماعتیں امن و امان یقینی بنائیں۔

بیرونی سازش سے متعلق خط ہی مشکوک نکلا، حامد میر نے تہلکہ خیز دعویٰ کردیا

سپریم کورٹ بار کے صدر احسن بھون نے عدالت میں کہا کہ انہوں نے ہر چیز کو پاؤں تلے روند دیا جس پر چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ یہ باتیں باہر کریں۔

مزید :

Breaking Newsاہم خبریںقومی

Original Article

Leave a Reply

Your email address will not be published.