Categories
Breaking news

تارکین وطن کے لیے بڑی خبر،کتنے ماہ کے کام کا ثبوت دے کر کاغذات حاصل کر سکتے ہیں؟

میڈرڈ (محمد نبی) منگل کے روز سیکٹری آف سٹیٹ فار مائیگریشن نے ہدایات دی ہیں کہ سپریم کورٹ کے فیصلے کو لاگو کیا جائے۔ عدالتی فیصلے نے ہزاروں تارکین وطن کو باضابطہ یا regularize کرنے کا کا حکم دیا ہے۔ اس سے فائدہ اٹھانے والوں میں پناہ کے متلاشی غیر ملکی بھی ہیں جن کی درخواستیں دو سال اسپین میں گزارنے کے بعد بھی مسترد کی جاتی تھیں۔ تارکین وطن مزدوری (labour) کی آڑ میں اس فیصلے سے فایدہ اٹھا پائیں گے۔ دو سال تک درخواستوں کے انتظار میں گزارنا بڑا مشکل تھا۔ تاہم موجودہ فیصلے کے بعد کاغزات کی حصولی آسان ہوگئی ہے۔ تارکین وطن اب صرف 6 ماہ کے کام کا ثبوت دے کر کاغذات حاصل کر سکتے ہیں۔

اب تک وہ افراد جنہوں نے “لیبر روٹس” سے فائدہ اٹھایا، وہ غیر قانونی یا غیر منظم تارکین وطن خیال ہوتے تھے۔ انہیں دو سال بعد بھی کم سے کم آدھے سال کی خفیہ ملازمت ثابت کرنی ہوتی تھی۔ مارچ کے مہینے میں سپریم کورٹ کا فیصلہ آیا تھا۔ بعد میں دو دیگر قرادوں کے ذریعے اس کی مزید توسیع کر دی گئی تھی۔ نظام انصاف کا خیال ہے کہ غیر ملکی اپنے کام کی نوعیت کا ثبوت دوسرے شواہد سے بھی پیش کر سکیں گے اور اس طرح “لیبر روٹ” کا پھیلاؤ وسیع ہو جائے گا۔ ہزاروں افراد کے پاس موقع ہوگا کہ وہ “لیبر ریلیشنز” مختلف حوالوں سے قائم کریں۔

خیال رہے کہ موجودہ قانون سے ہزاروں پناہ کے متلاشی غیر ملکی بھی فایدہ اٹھا سکیں گے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ وہ اس فیصلے کی قراردادوں پر پورا اترتے ہیں۔ قانون کے مطابق باضابطہ طور پر پناہ کی درخواست کے 6 ماہ بعد وہ قانونی طور پر رہ سکیں گے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *