Categories
Breaking news

برطانیہ میں معمولات زندگی بحالی کیلئے حکومت کوشاں، تمام دستیاب آپشنززیرغور، وزیراعظم آج مزید اقدامات کا اعلان کرینگے

Advertisement

لندن (سعید نیازی) وزیراعظم بورس جانسن آج ’’ایسٹر منڈے‘‘ کو لاک ڈائون میں نرمی کے حوالے سے مزید اقدامات کا اعلان کریں گے۔ جن کے تحت ’’ویکسین پاسپورٹ‘‘ کے9پائلٹ پراجیکٹس کے علاوہ موسم گرما میں بیرون ملک تعطیلات کیلئے ٹریفک لائٹس کی طرز کے نظام کا اعلان بھی شامل ہوگا۔ 9پائلٹ پراجیکٹ میں رواں ماہ کے وسط سے ویمبلے فٹبال اسٹیڈیم میں تین میچز اور لیور پول میں رات کے وقت منعقد ہونے والے تفریحی پروگرام شامل ہوں گے جبکہ ٹریفک لائٹس سسٹم کے تحت گرین لائٹ والے ممالک میں جانے والے افراد کو واپسی میں قرنطینہ کی ضرورت نہیں ہوگی۔ ریڈ، امبر اور گرین لائٹس والے ممالک کا انتخاب وہاں پر انفیکشن کی شرح کے حساب سے کیا جائے گا لیکن حکومت نے شہریوں سے کہا ہے کہ وہ ابھی تعطیلات بک نہ کریں۔ کیبنٹ آفس منسٹر مائیکل گوو نے بھی اس بات کا واضح اشارہ دیا ہے کہ ویکسین پاسپورٹ جلد متعارف کرا دیا جائے گا اور یہ اسکیم ویسی ہی ہوگی جیسی کہ اسرائیل میں پہلے ہی چل رہی ہے۔ انہوں نے کہا ویکسی نیشن کے ذریعے بڑی حد تک وبا پر قابو پایا جاسکتا ہے لیکن یہ سو فیصد تحفظ فراہم نہیں کرتی، اس لئے معمول کی زندگی کی بحالی کیلئے حکومت تمام دستیاب آپشنز پر غور کرے گی، جن کے تحت محفوظ اور جلد عام زندگی بحال ہوسکے۔ انہوں نے کہا کہ اسرائیل میں اس اسکیم کے نفاذ کیلئے ایپ متعارف کرائی گئی ہے، یہاں این ایچ ایس کی ایپ اس مقصد کیلئے استعمال کی جاسکتی ہے۔ ویمبلے فٹ بال اسٹیڈیم میں پائلٹ اسکیم کے تحت 18 اپریل کو لیسٹر سٹی اور سائوتھمپٹن کے درمیان ایف اے کپ کا سیمی فائنل کھیلا جائے گا۔ کارابائو Carabao کپ کا فائنل مانچسٹر سٹی اور نوٹنگھم ہوٹسپر کے درمیان 25 اپریل کو اور ایف اے کپ کا فائنل 15 مئی کو منعقد ہوگا۔ لیور پول میں پائلٹ پراجیکٹ 16اپریل سے شروع ہوں گے، جبکہ ورلڈ اسنوکر چیمپئن شپ شفیلڈ میں17اپریل کو منعقد ہوگی۔ انگلینڈ میں دکانیں 12 اپریل سے کھیلیں گی۔ تاہم پب، ریسٹورنٹ اور غیرضروری اشیا کی دکانوں سمیت پبلک ٹرانسپورٹ میں داخلے کیلئے ویکسین پاسپورٹ کی ضرورت نہیں ہوگی۔ مختلف جماعتوں سے تعلق رکھنے والے 72 کے قریب اراکین پارلیمنٹ نے اس کی مخالفت کی ہے اور اسے تفریق پیدا کرنے والی امتیازی اسکیم قرار دیا ہے۔ اگر حکومت کو اس اسکیم کے نفاذ کیلئے قانون سازی کی ضرورت پڑی تو حکومت ان اراکین پارلیمنٹ کو اس امر پر راضی کرنا ہوگا کہ یہ اسکیم عارضی ہے جو کہ ایک برس تک نافذالعمل رہے گی۔ ڈائوننگ اسٹریٹ کا کہنا ہے کہ17مئی سے تفریحی مقاصد کیلئے سفر کرنا ممکن ہوا تو حکومت قبل ازوقت عوام کو آگاہ کردے گی

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *