Categories
Breaking news

بارڈر فورس پر تارکین وطن کو غیر قانونی طریقہ سے ملک میں داخل کرانے کا انکشاف

راچڈیل(نمائندہ دوست )برطانوی بارڈر سیکیورٹی فورسز کی طرف سے مبینہ طور پر تارکین وطن کو غیر قانونی طریقے سے ملک میں داخل کرانیکا انکشاف ہوا ہے، چینل کے تارکین وطن کو برطانوی بارڈر فورس کی ٹیم نے خفیہ طور پر فرانسیسی پانیوں میں سے اٹھایا اور ڈوور لے گئے، چینل کے فرانسیسی جانب ہونے والی متنازع کارروائی کا تبادلہ ایچ ایم سی والینٹ اور فرانسیسی گشتی جہاز ایتھوس کے سینئر عملے کے ممبروں کے درمیان گذشتہ ہفتے کے روز کیا گیا تھا۔ہوم آفس کے ذرائع کے مطابق حکومت کی اپنی بارڈر ایجنسی نے مہاجروں کو غیر قانونی طور پر ملک میں داخل ہونے میں مدد فراہم کی ہے ،

بارڈر فورس کا کام برطانیہ کی سرحد کو محفوظ بنانا ہے، انکے پاس تارکین وطن کو غیر قانونی طورپر داخل کرنیکی سہولت اور اختیارات نہیں ہیں، سیکرٹری داخلہ پریتی پٹیل نے فرانس سے ریکارڈ تعداد میں برطانیہ پہنچنے والے تارکین وطن اورموجودہ صورتحال پر ناراضی کا اظہار کرتے ہوئے سخت کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا ہے، لیکن ان کے اس سخت موقف کو ان کی اپنی بارڈر فورس کی عداوتوں نے نقصان پہنچایا ہے، بارڈر فورس خفیہ طور پر فرانس کے پانیوں میں تارکین وطن کو اٹھا نے کے واقعہ کی بازگشت پر سیکرٹری داخلہ پریتی پٹیل نے فوری طور پر نوٹس لیتے ہوئے واقعہ کی تحقیقات شروع کرادی ہیں۔ انہوں نے کہا ایسا بالکل نہیں ہونا چاہیے، سمندری ریڈیو گفتگو کی ریکاڈنگ میڈیا کے ہاتھ لگ گئی، جس میں افسران آپریشن کی قانونی حیثیت پر تبادلہ خیال کر رہے ہیں، اس کے بعد برطانیہ کا 140 فٹ کا کٹروالینٹ چینل کے فرانسیسی حصے کی طرف روانہ ہوا اور تارکین وطن کو جمع کرنے اور انہیں ڈوور لے جانے کے لیے ایک تیز رفتار انفلٹیبل کشتی استعمال کی گئی،

غیر معمولی کارروائی چار دن کے دوران ریکارڈ کی گئی، اس دوران 560 سے زیادہ تارکین وطن برطانیہ پہنچے، 28 مئی اب تک کے سال کا سب سے مصروف دن رہاجب 336 تارکین وطن 21 میل کافرانسیسی ساحل طے کر کے شمالی فرانس سے برطانیہ پہنچے، ہماری سرحدوں کی حفاظت کے لئے سمندری گشت پر ایک سرکاری جہاز ، والینٹ کا طرز عمل ، وائٹ ہال کے بار بار کشتی مہاجروں کے لاتعداد بہاؤ کو روکنے کے وعدوں کا سامنا کرتا ہے، سیکرٹری داخلہ پریتی پٹیل نے کہا ہے کہ وہ چاہتی ہیں کہ فرانسیسی سمندر میں غیرقانونی مہاجرین کے جہازوں سے نمٹنے کیلئے ٹھوس اور موثر اقدامات کیے جائیں، گزشتہ برس مئی میں سیکرٹری داخلہ پریتی پٹیل نے اپنے پیرس کے ہم منصب سے فرانسیسی سمندروں میں اس معاملے پر مداخلت کرنے پر اتفاق رائے کا اظہار کیا تھا،

برطانیہ کی طرف سے غیر قانونی مہاجرین کی نقل و حمل روکنے کیلئے اضافی گشت کے نظام اور سیکیورٹی اہلکاروں کی تعیناتی کیلئے فرانس کو 28ملین پائونڈ دینے کا اعلان کیا، باور کیا جا رہا ہے کہ فرانس سے برطانیہ آنیوالے غیر قانونی مہاجرین کی نقل وحمل پر قابو نہ پایا جا سکا تو یہ تعداد گزشتہ برس سے تجاوز کریگی، رواں سال میں ابتک 4ہزار 3سو سے زائد غیر قانونی مہاجرین برطانیہ پہنچ چکے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *