Categories
Breaking news

ایک نالائق کو بچانے کیلئے تمام حربے استعمال ہو رہے ہیں: مریم نواز

Advertisement
ایک نالائق کو بچانے کیلئے تمام حربے استعمال ہو رہے ہیں: مریم نواز

مسلم لیگ نون کی نائب صدر اور سابق وزیرِ اعظم میاں نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز کہتی ہیں کہ ایک نالائق کو بچانے کے لیے سارے حربے استعمال کیئے جا رہے ہیں۔

Advertisement

لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ نون کی نائب صدر اور سابق وزیرِ اعظم میاں نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز کا کہنا ہے کہ جہاں جہاں عوام کی طاقت ہوگی وہاں نون لیگ کو شکست دینا نا ممکن ہے۔

Table of Contents

x
Advertisement

انہوں نے کہا کہ نالائق اور نا اہل کو بچانے کے لیے انصاف کے نظام کو جھونکا جا رہا ہے، ویڈیو بنانے، پیسے دینے اور لینے والے یہ خود ہیں۔

مریم نواز نے کہا کہ مسلم لیگ نون کو توڑنے کی تاریخی کوشش ہوئی، نون لیگ نہیں ٹوٹی، حکمرانوں کی اصلیت عوام کے سامنے کھل کر سامنے آ گئی۔

مریم نواز نے سرکاری ملازمین کی حمایت کا اعلان کردیا

مریم نواز نے کہا کہ پہلی حکومت ہے جس نے چار گنا مہنگائی کے باوجود تین سال میں سرکاری ملازمین کی تنخواہ میں ایک روپے کا اضافہ نہیں کیا۔

انہوں نے کہا کہ انصاف کے دہرے نظام کے خلاف ہم آواز اٹھا رہے ہیں، پی ڈی ایم خفیہ رائے شماری کو بالکل سپورٹ نہیں کرتی۔

مسلم لیگ نون کی نائب صدر اور سابق وزیرِ اعظم کی صاحبزادی مریم نواز کا مزید کہنا ہے کہ گلی گلی، محلے محلے میں آٹا اور بجلی چور کی آوازیں لگ رہی ہیں۔

انہوں نے یہ بھی کہا ہے کہ الیکشن اصلاحات ضرور کریں گے، پی ڈی ایم بھی یہی چاہتی ہے، تاہم قانون سازی بندۂ تابعدار کے ساتھ بیٹھ کر نہیں ہو سکتی۔

واضح رہے کہ مریم نواز گوجرانوالہ کے این اے 75 میں ہونے والے ضمنی انتخاب کے سلسلے میں نکالی جانے والی نون لیگ کی ریلی میں شرکت کریں گی۔

یہ بھی پڑھیے

نون لیگ کے ذرائع کے مطابق مریم نواز بذریعہ موٹر وے قلعہ کالر والا پہنچیں گی، جہاں سے ریلی کا روٹ ستراہ اور پھر دھرمکوٹ چوک ہو گا، دھرم کوٹ چوک سے ریلی منڈے کی چوک، پھر ڈسکہ پہنچے گی۔

ستراہ، دھرم کوٹ اور منڈےکی میں مریم نواز کا مختصر خطاب بھی ہوگا، جبکہ ڈسکہ شہر میں وہ جلسے سے خطاب کریں گی۔

نون لیگ کے ذرائع نے یہ بھی بتایا کہ جلسے کے بعد مریم نواز کے سیالکوٹ جانے کا بھی امکان ہے، جہاں وہ منشاء اللّٰہ بٹ اور خواجہ آصف کے گھر جائیں گی۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *