Categories
Breaking news

اگر اسپتال بھرے تو لاک ڈاؤن لگا سکتے ہیں: وزیرِ صحت سندھ

وزیرِ صحت سندھ عذرا پیچوہو —فائل فوٹو
وزیرِ صحت سندھ عذرا پیچوہو —فائل فوٹو

وزیرِ صحت سندھ عذرا پیچوہو نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ کورونا وائرس اور اس کے ویرینٹ اومی کرون کے باعث اگر اسپتال بھرے تو لاک ڈاؤن کی جانب جا سکتے ہیں۔

یہ بات وزیرِ صحت سندھ عذرا پیچوہو نے حیدر آباد میں میڈیا سے بات چیت کے دوران کہی۔

ان کا کہنا ہے کہ اومی کرون وائرس تیزی سے پھیل رہا ہے، اشارہ یہی ہے کہ ایک دو ماہ میں اومی کرون کے ہزاروں کیسز سامنے آئیں گے۔

عذرا پیچوہو کی پاکستان میڈیکل کمیشن بل کی مخالفت

وزیرصحت سندھ ڈاکٹر عذرا پیچوہو نے پاکستان میڈیکل کمیشن بل کی مخالفت کردی۔

سندھ کی وزیرِ صحت نے کہا کہ فی الحال لاک ڈاؤن کی طرف نہیں جا رہے، تاہم اسپتال کورونا مریضوں سے بھرے تو لاک ڈاؤن کی جانب جا سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس اور اس کے ویرینٹ اومی کرون سے بچنے کے لیے ایس او پیز پر عمل درآمد ضروری ہے۔

ڈاکٹر عذرا پیچوہو کا مزید کہنا ہے کہ شاید اسمارٹ لاک ڈاؤن کی ضرورت پڑے۔

سندھ کی وزیرِ صحت نے زور دیتے ہوئے یہ بھی کہا ہے کہ والدین 12 سال سے زائد عمر کے بچوں کو کورونا ویکسین لگوائیں۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Leave a Reply

Your email address will not be published.