Categories
Breaking news

آرٹیکل 63A کی تشریح پر نظرِ ثانی کیلئے سپریم کورٹ بار کی درخواست دائر

—فائل فوٹو
—فائل فوٹو

سپریم کورٹ آف پاکستان میں صدارتی ریفرنس کے معاملے میں آرٹیکل 63 اے کی تشریح پر نظرِ ثانی کے لیے سپریم کورٹ بار نے درخواست دائر کر دی۔

سپریم کورٹ بار کی درخواست میں عدالت سے استدعا کی گئی ہے کہ آرٹیکل 63 اے کی تشریح سے متعلق 17 مئی کی عدالتی رائے پر نظرِ ثانی کی جائے۔

عدالتِ عظمیٰ سے استدعا کی گئی ہے کہ منحرف اراکین کا ووٹ شمار نہ کرنے کے پیرا گراف پر نظرِ ثانی کر کے رائے واپس لی جائے۔

آئین کا آرٹیکل 63 اے کیا ہے؟

اپوزیشن نے 8 مارچ کو وزیراعظم عمران خان کے خلاف قومی اسمبلی سیکرٹریٹ میں تحریک عدم اعتماد جمع کرائی۔

سپریم کورٹ بار نے اپنی درخواست میں مؤقف اپنایا ہے کہ سپریم کورٹ کی منحرف ارکان کا ووٹ شمار نہ کرنے کی رائے خلافِ آئین ہے۔

درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ سپریم کورٹ کی رائے آئین میں مداخلت کے مترادف ہے، آرٹیکل 63 اے کے مطابق منحرف ارکان صرف ڈی سیٹ ہوں گے۔

سپریم کورٹ بار نے اپنی درخواست میں وفاقی حکومت اور الیکشن کمیشن کو فریق بنایا ہے ۔

واضح رہے کہ سپریم کورٹ نے آرٹیکل 63 اے کے تحت منحرف اراکین کا ووٹ شمار نہ کرنے کی رائے دی تھی۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Leave a Reply

Your email address will not be published.