Categories
Breaking news

انجمن اساتذہ جامعہ کراچی اور صوبائی وزیر اسماعیل راہو کے درمیان مذاکرات

انجمن اساتذہ جامعہ کراچی اور صوبائی وزیر اسماعیل راہو کے درمیان مذاکرات

انجمن اساتذہ جامعہ کراچی اور صوبائی وزیر برائے بورڈز و جامعات اسماعیل راہو کے درمیان مذاکرات ہوئے ۔

ملاقات میں سکریٹری بورڈز و جامعات مرید راحموں بھی موجود تھے ، ملاقات میں میں طے کیا گیا کہ ملتوی شدہ سلیکشن بورڈ دوبارہ شروع کیا جائے گا جبکہ جامعات سے متعلق خط لکھا گیا خط تمام جامعات کیلئے نہیں تھا۔

یہ بھی فیصلہ کیا گیا کہ میکنزم بنانے کیلئے سندھ کی باقی جامعات کو تصیح کرکے خط ارسال کیا جائے گا اور آئندہ وائس چانسلرز کو سلیکشن بورڈ وقت مقررہ پر مکمل کرنے کی ہدایت کی جائے گی۔

اس موقع پر صوبائی وزیر نے کہا کہ وہ جامعات کی خودمختاری کو اہمیت دیتے ہیں اور جامعات کی خودمختاری کے ساتھ کھڑے ہیں۔

اساتذہ رہنماؤں نے کہا کہ جامعہ کراچی میں تدریس بحال کرنے کا فیصلہ جنرل کونسل کرے گی اور انجمن اساتذہ جامعہ کراچی کی جنرل کونسل کو صوبائی وزیر سے ہونے والی ملاقات کے حوالے سے آگاہ کیا جائیگا۔

جامعہ کراچی میں مزید 10 روز کلاسز کا بائیکاٹ

انجمن اساتذہ جامعہ کراچی نے سکریٹری بورڈز و جامعات کے رویے کے خلاف مزید 10 روز کلاسوں کا بائیکاٹ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

ملاقات میں وزیر بورڈز و جامعات نے سکریٹری بورڈز و جامعات کے تبادلے سے متعلق مطالبے سے اتفاق نہیں کیا۔

ملاقات کرنے والے اساتذہ میں ڈاکٹر علی القدر، ڈاکٹر محسن، ڈاکٹر حارث شعیب، ڈاکٹر الفت اور رکن سندھ اسمبلی سعدیہ جاوید بھی شامل تھے۔

واضح رہے کہ جامعہ کراچی میں اساتذہ نے ایک استاد کا سلیکشن بورڈ ملتوی کرانے کے معاملے پر گزشتہ 10 روز سے تدریسی امور کا بائیکاٹ کررکھا ہے تاہم اب اس بائیکاٹ کے خلاف جامعہ کراچی میں طلبہ تنظیموں نے مظاہرے شروع کردئیے ہیں۔

بدھ کو پیپلز اسٹوڈنٹس فیڈریشن اور آئی ایس او کے طلبہ نے مظاہرہ کیا اور فوری تدریسی عمل شروع کرنے کا مطالبہ کیا۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Leave a Reply

Your email address will not be published.