Categories
Breaking news

اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ، کمر توڑ مہنگائی، ادارہ شماریات کی رپورٹ جاری

Advertisement
Advertisement

مہنگائی

گزشتہ ہفتے 07 سے 11 ستمبر 2020 کے دوران مہنگائی میں 0.37 فیصد اضافہ ہوا، اس عرصے میں 22 اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ، 8 اشیا کی قیمتوں میں کمی اور 23 اشیا کی قیمتوں میں استحکام رہا۔

قومی ادارہ شماریات نے مہنگائی کے حوالے سے ہفتہ وار رپورٹ جاری کردی، ایک ہفتے کے دوران مہنگائی میں 0.37 فیصد اضافہ ہوا اور مہنگائی کی شرح 9.04 فیصد کی سطح پر پہنچ گئی۔

ادارہ شماریات کے مطابق ایک ہفتے میں 22 اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ، 8 اشیا کی قیمتوں میں کمی اور 23 اشیا کی قیمتوں میں استحکام رہا۔

رپورٹ کے مطابق ایک ہفتے میں زندہ مرغی 22 روپے فی کلو مہنگی ہوئی، دال مونگ 13 روپے، دال ماش 7 روپے، دال چنا ڈھائی روپے اور دال مسور 2 روپے مہنگی ہوئی۔

اسی طرح ایل پی جی سلنڈر کی قیمت میں 8 فیصد، مٹن 6 روپے اور آٹے کے 20 کلو تھیلے کی قیمت میں 15 روپے اضافہ ہوا۔ گڑ، ماچس، تازہ دودھ، دہی، چاول اور گائے کا گوشت بھی مہنگا ہوا۔

ادارہ شماریات کا کہنا ہے کہ ٹماٹر کی قیمت میں 5 اور لہسن کی قیمت میں 4 روپے فی کلو کمی ہوئی جبکہ آلو، پیاز، کیلے اور چینی بھی سستی ہوئیں۔

علاوہ ازیں پیٹرول، ڈیزل، مٹی کے تیل، بجلی اور گیس کے نرخ سمیت ملبوسات کی قیمتیں مستحکم رہیں۔

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *