Categories
Breaking news

اسپین بھر میں اسٹیٹ آف الارم ختم ہوتے ہی آؤٹ ڈور پارٹیاں شروع، پولیس بھی میدان میں آ گئی

میڈرڈ (محمد نبی) ہفتے کی رات اسپین میں ماحول یکسر مختلف تھا۔ 6 مہینوں کے اسٹیٹ آف الارام اور کورونا پابندیوں کے بعد لوگ اسپین کی گلی بازاروں میں نکل آئے۔ پارٹیاں اور جشن منانے لگے۔ میڈرڈ میں لوگوں کا ہجوم ریوڑ کی شکل میں پیورتا دیل سول جہاں نیا سال منایا جاتا ہے، کا رخ کیا۔ پولیس کو 450 تادیبی کاروائیاں کرنی پڑی۔ بارسلونا میں حکام نے 6,500 افراد کو منتشر کیا۔ پالما دی مالورکا میں 16 افراد کو حراست میں لیا گیا جہاں 4 نیشنل پولیس افسران زخمی ہوئے۔

یہ تقریبات ایک ایسے وقت میں ہو رہی ہیں جہاں کورونا وبا کا خطرہ مکمل طور پر نہیں ٹل سکا ہے اور اعداد وشمار کسی طور بھی بہتری کی نشاندہی نہیں کر رہے۔ گزشتہ ہفتے ایک لاکھ آبادی کے تناسب سے 14 دنوں میں مسلسل کیسز کی شرح کچھ بہتر ہوئی مگر غیر یقینی کی صورت حال برقرار ہے۔ جمعہ کے روز سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اس تناسب سے کیسز کی شرح اوسطا 198 تھی۔ وزارت صحت نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اس کو “ہائی رسک” قرار دیا تھا۔ 5 علاقے جن میں میڈرڈ، کاتالونیا، ناررے، ایریگون اور باسکے کنٹری شامل ہیں، میں کیسز کی شرح 250 سے اوپر ہے۔ ماہرین کی رائے میں اس کے باوجود شہریوں کا اتنی بڑی تعداد میں باہر نکلنا اس امر کی عکاسی کرتا ہے کہ وہ حقیقی حالات سے بے خبر ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *