Categories
Breaking news

اسپین اور دوسرے یورپین ممالک میں ویکسینشن کا عمل کس رفتار سے جا رہا ہے؟ جانئے تفصیلات

Advertisement

میڈرڈ(محمد نبی) کورونا وائرس کے خلاف ویکیسینشن کی مہم تیز ہو رہی ہے اور یورپین ممالک ایک دوسرے سے آگے بڑھنے کی دوڑ میں لگے ہوئے ہیں۔ بعض ممالک دوسروں سے پیچھے ہیں۔ شروع میں یورپین ویکسینشین مہم سست روی کا شکار رہی۔ اس پر باہر کی دنیا کے علاوہ اندر سے بھی تنقید شروع ہوئی۔ تاہم کچھ دنوں سے ویکسینشن کا عمل تیز ہو رہا ہے۔
بدھ کے روز جرمنی نے 656000 ڈوزز کا اہتمام کیا تھا۔ اس سے پہلے یوکے میں اتنے بڑے پیمانے پر ویکسینیشن کا انتظام نہیں ہوا تھا۔ اسی طرح منگل کے روز 290000 ویکسینز کا انتظام کیا گیا۔ جب کہ جمعرات کے دن جرمن آبادی کو 7 لاکھ خوارکیں دی گئیں۔
فرانس میں جمعرات کے دن اعلان کیا کہ وہ 10 ملین ایک ہفتے میں ویکسین مہیا کرکے اپنا ہدف حاصل کرنے میں کامیاب ہوگیا ہے۔ جب کہ 437000 یومیہ کے حساب سے ڈوززکا انتطام ہو رہا ہے۔
گزشتہ چند دنوں سے اسپین میں بھی بڑے پیمانے پر ویکسینیشن کا عمل شروع ہوا ہے۔ صحت کے حکام نےبدھ کے روز 336846 ڈوزز کا انتظام کیا جب کہ دوسرے دن 456682 خواراکیں مہیا کی گئیں۔
اٹلی میں کچھ مسائل ہیں جہاں ہدف حاصل نہیں کیا سکا۔8 اپریل کو جاری کئے گئے اعداد و شمار کے مطابق یورپین یونین کے 60 ملین سے زیادہ لوگوں کو کم سے کم ایک ڈوز لگ چکی ہے۔ ان میں 2۔22 ملین جرمنی کے جو آبادی کا 6۔14 فیصد بنتا ہے، 2۔10 ملین فرانس میں (2۔15 فیصد آبادی)، 4۔8 ملین اٹلی (8۔13 فیصد آبادی)، 8۔6 ملین اسپین کے (5۔14 فیصد آبادی)، آسٹریا کی 3۔1 ملین جب کہ سویڈن کی 4۔1 ملین آبادی کو ویکسسین لگ چکی ہے۔ دوسرے یورپی ممالک بھی اسی رفتار سے جا رہے ہیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *