Categories
Breaking news

اسپین۔تقریبا ایک سال کے بعد ماسک پر سے جزوی پابندی اٹھا لی گئی

بارسلونا(دوست مانیٹرنگ ڈیسک)گزشتہ سال 9جولائی 2020 کو اسپین حکومت نے گھر سے باہرتمام جگہوں پر ماسک پہننا لازمی قرار دیا گیا تھا۔جو 26 جون 2021کو تقریبا ایک سال کے بعد اس پابندی کو اٹھا لیا گیا ہے کہ اب لوگ باہر کھلی جگہوں اور سڑکوں پر ماسک پہننے کی ضرورت نہیں ہے۔لیکن اس پابندی کے اٹھانے کے باوجود ماسک آپ کے پاس ہونا چاہیئے۔ تاکہ جب آپ بھیٹر یا ڈیڑھ میٹر کا فاصلہ رکھنا ممکن نہ رہے تو ماسک پہننا لازمی ہے۔اس کے علاوہ بوڑھوں یا معذور افراد کے مراکز جیسی سہولیات کے مکینوں کو ماسک پہننے سے مستثنیٰ قرار دیا گیا ہے جو80٪ صارفین پہلے ہی ویکسینیشن کا مکمل شیڈول حاصل کرچکے ہیں۔اسی طرح ایسے ماحول میں کام کرنے والے ضروری کارکن جہاں 80٪ کارکنوں کو پہلے ہی مکمل ویکسی نیشن مل چکی ہے۔دوسری طرف 6 سال سے کم عمر بچوں اوران کی نگہداشت کرنے والوں کو اجازت ہے۔

ماسک اب بھی کہاں لازمی ہے؟
جمعہ کے روز سرکاری اسٹیٹ گزٹ (بی او ای) میں شائع ہونے والے 24 جون کو جاری کردہ حکمنامہ قانون کے مطابق ماسک پہننا لازمی ہےجب 1.5 میٹر کا محفوظ فاصلہ برقرار رکھنا ناممکن ہے تو سڑک پر ماسک پہننا ضروری ہے۔اس کے علاوہ لائبریریوں ، شہری خدمات کے دفاتر اور عوام کے لئے نجی کھلی جگہوں پر (دکانوں ، بینکوں ، فارمیسیوں )میں پہننا لازمی ہے۔عوامی نقل و حمل پر بھی بشمول اسٹیشنوں کے پلیٹ فارم اور لابی۔ فضائی اور سمندری نقل و حمل میں ، مسافر بردار بحری جہازوں میں ماسک لازمی ہے۔
جرمنی کی ایک مارکیٹ ریسرچ کمپنی اپینیو کے ذریعہ کی گئی ایک تحقیق جس کے مطابق 76 فیصد ہسپانویوں کا خیال ہے کہ لازمی ماسک کا خاتمہ کوویڈ 19 کے پھیلاؤ میں اضافہ کرے گا۔جبکہ 29٪ جواب دہندگان کا کہنا ہے کہ وہ ہمیشہ کے لئے ماسک پہنتے رہیں گے۔اس کے برعکس 75٪ جواب دہندگان اندرونی جگہوں سے ماسک اتارنے کے خلاف تھے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *