Categories
Breaking news

اسٹرابیری کے حیرت انگیز و صحت بخش فوائد

موسمی کھٹا میٹھا پھل اسٹرابیری ہر عمر کے افراد کی پسند ہے، اسٹرابیری بناوٹ میں نہایت خوبصورت اور کھانے میں لذیذ اور فرحت بخش پھل ہے جسے انسانی مجموعی صحت کی ضمانت بھی قرار دیا جاتا ہے۔اسٹرابیری کی 600 سے زائد اقسام پاکستان سمیت دنیا بھر میں پائی جاتی ہیں، مارکیٹ میں با آسانی دستیاب اسٹرابیری سے بنے والی آئسکریم، جیم، فالودہ، میٹھی غذائیں، کیک، ملک شیک، سلاد اور دیگر پکوان نہایت شوق سے کھائے جاتے ہیں۔ ایک طبی تحقیق کے مطابق اسٹرابیری کا روزانہ استعمال انسان کی قوت مدافعت کو بڑھانے اور صحت مند رکھنے میں اہم کردار ادا کرتا ہے، اس کے فوائد جان کر آپ بھی آج ہی سے اس پھل کا استعمال یقیناً شروع کر دیں گے۔
اسٹرابیری کے استعمال سے صحت کو ملنے والے فوائد درجِ ذیل ہیں:
دل کی صحت کے لیے نہایت مفید پھل
اسٹرابیری دل کے مریضوں کے لیے انتہائی مفید پھل ہے، ایسے لوگ جو دل کی بیماریوں سے بچنا چاہتے ہیں انہیں چاہیئے کہ وہ زیادہ سے زیادہ اسٹرابیری استعمال کریں۔اسٹرابیری میں ایسے قدرتی اجزا پائے جاتے ہیں جو عارضہ قلب اور کینسر جیسے کئی مہلک امراض سے لڑنے کی صلاحیت رکھتے ہیں، اسٹرابیری میں موجود پوٹاشیم اور منرلز جسم کا مدافعتی نظام بہتر بناتے ہیں۔
خراب کولیسٹرول کے خلاف مزاحمت
دنیا بھر میں امراضِ قلب طبی اموات کی بڑی وجوہات میں سے ایک ہے اور اسٹرابیری میں دل کی صحت کو بہتر بنانے کی صلاحیت ہے۔ ’ایلیجک ایسڈ‘ اور ’فلیونوائڈز‘ ایسا اینٹی آکسیڈنٹ اثر فراہم کرتے ہیں جو کہ دل کی صحت کو بہتر بناتا ہے، یہ خون میں خراب کولیسٹرول کے اثرات کا مقابلہ کرتے ہیں جو شریانوں میں خون گاڑھا کرنے کا باعث بنتے ہیں۔ایک کینیڈین تحقیق کے مطابق اسٹرابیری کا غذا میں استعمال امراضِ قلب اور ذیابطیس سے تحفظ دینے سمیت جسم سے مضرِ صحت منفی کولیسٹرول کے اخراج کا بھی سبب بنتا ہے۔
آنکھوں کی صحت کے لیے مفید
اینٹی آکسیڈنٹس سے بھرپور اسٹرابیری آنکھوں کے موتیے کے مرض کی روک تھام میں مددگار ثابت ہوسکتی ہے، اس کے نتیجے میں بڑھاپے میں بینائی ختم ہونے کا خطرہ کم ہو جاتا ہے۔ ہماری آنکھوں کو وٹامن سی درکار ہوتا ہے تاکہ سورج کی الٹرا وائلٹ شعاعوں کے اثرات سے بچا جا سکے کیوں کہ یہ قرنیئے کے پروٹین کو نقصان پہنچاتی ہیں، وٹامن سی آنکھوں کے قرنیئے اور پردہ چشم کو مضبوط بنانے کا کام کرتا ہے۔
مدافعتی نظام بہتر بنائے
طبی ماہرین کے مطابق اسٹرابیری وٹامن سی کے حصول کا بہترین ذریعہ ہے، انسانی جسم اس وٹامن کو بنانے کی صلاحیت نہیں رکھتا اور اسی لیے اسے غذائی شکل میں حاصل کرنا بہت اہمیت رکھتا ہے، وٹامن سی جسمانی دفاعی نظام کو مضبوط اور طاقتور کرتا ہے۔
کیلیفورنیا یونیورسٹی کی ایک تحقیق کے مطابق اگر چند ہفتوں تک اسٹرابیری کا روزانہ استعمال کیا جائے تو اس میں موجود اینٹی آکسیڈنٹس کی طاقت خون کا حصہ بن جاتی ہے، جسم کے صحت مند دفاعی نظام کی بدولت امراض سے دفاع بھی مضبوط ہوتا ہے۔
سوزش، سوجن اور ورم میں کمی
اسٹرابیری میں موجود اینٹی آکسیڈنٹس اور دیگر اجزاء جوڑوں کے ورم کا اثر کم کرنے میں بھی ممکنہ طور پر مددگار ثابت ہو سکتے ہیں۔ہارورڈ اسکول آف پبلک ہیلتھ کی ایک تحقیق کے مطابق جو خواتین ہر ہفتے 16 یا اس سے زائد اسٹرابیریز کھاتی ہیں ان میں جوڑوں کے ورم کا خطرہ 14 فیصد تک کم ہو جاتا ہے۔
حاملہ خواتین کے لیے بہترین آپشن
عام طور پر حاملہ خواتین کو وٹامن بی کی ایک قسم فولیٹ (Folate) کے استعمال کا مشورہ دیا جاتا ہے، اسٹرابیری اس کے حصول کا بہترین ذریعہ ہے۔ فولیٹ کو حمل کے ابتدائی مراحمل میں بچے کے دماغ، کھوپڑی اور ریڑھ کی ہڈی کے لیے ضروری مانا جاتا ہے اور اسٹرابیری کے استعمال سے مخصوص پیدائشی نقص کی روک تھام میں بھی ممکنہ طور پر مدد مل سکتی ہے۔
کینسر کے علاج میں مددگار
ماہرین کے مطابق کینسر ایک پیچیدہ مرض ہے جس میں ’سیلولر‘ اور ’مالیکیولر‘ سطح پر نہایت پیچیدہ عوامل ہو رہے ہوتے ہیں، تاہم بریسٹ کینسرکی شدت کم کرنے میں اسٹرابیری کلیدی کردار ادا کر سکتی ہیں۔
ایک نئی طبی تحقیق کے مطابق اسٹرابیری بریسٹ کینسر کے علاج میں مددگار ثابت ہو سکتی ہے۔
کینسر کے خلاف مفید وٹامن سی ایسا جزو ہے جو کینسر کی روک تھام کے لیے بھی مددگار ثابت ہوتا ہے۔
ایک تحقیق کے مطابق اسٹرابیری میں موجود ایلیجک ایسڈ انسدادِ کینسر کی خصوصیات رکھتا ہے اور کینسر کے خلیات کی نشوونما کو روکتا ہے۔
خوبصورتی اور رنگت میں نکھار لاتی ہے
اسٹرابیری میں موجود وٹامن سی کولیجن کو بڑھانے کے لیے بھی اہم ہے۔
کولیجن جِلد کی لچک اور نرمی کو بہتر بنانے میں مدد دیتا ہے، عمر بڑھنے کے ساتھ کولیجن کی سطح میں کمی آتی ہے، تاہم وٹامن سی سے بھرپور غذا کے استعمال سے جِلد کو صحت مند اور جوان بنانے میں مدد ملتی ہے۔
وٹامن سی کے ساتھ ساتھ اسٹرابیری میں موجود ایلیجک ایسڈ جھریوں کو روکتا ہے۔
اسٹرابیری کا استعمال رنگت میں نکھار لانے کے علاوہ ایکنی اور چھائیوں کو دور کر کے چہرہ تر و تازہ اور شاداب بناتا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *