Categories
Breaking news

اسلام آباد میں سرکاری ملازمین کے احتجاج پر پولیس کی شیلنگ

Advertisement

اسلام آباد میں لیڈی ہیلتھ ورکرز اور سرکاری ملازمین کا مارچ ڈی چوک پہنچ گیا۔ پولیس نے شیلنگ کرکے مظاہرین کو روکنے کی کوشش کی ہے۔

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد سرکاری ملازمین کے احتجاج اور پولیس کی شیلنگ کے باعث میدان جنگ بن گیا ہے، کنٹینر لگاکر ڈی چوک کو بند کردیا گیا ہے۔

ڈیڑھ گھنٹے سے پولیس کی جانب سے مظاہرین پر شلینگ کا سلسلہ جاری ہے جبکہ مظاہرین بھی شیلنگ اٹھا کر واپس پولیس کی طرف پھینک رہے ہیں۔

مظاہرین کا مطالبہ ہے کہ ان کی تنخواہوں میں فوری طور پر اضافہ کیا جائے جب تک تنخواہوں میں اضافہ نہیں کیا جائے گا ہم اپنا دھرنا جاری رکھیں گے۔

اسلام آباد: آنسو گیس کی شدت کے باعث پولیس اور رینجرز پیچھے چلی گئی

دوسرے شہروں سے سرکاری ملازمین احتجاج کےلیے پارلیمنٹ آنا چاہتے تھے، پولیس کی جانب سے سرکاری ملازمین کو روک دیا گیا۔

دوسری طرف سیکریٹری داخلہ وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں آج ہونے والے سرکاری ملازمین کے احتجاج ودھرنے کی لمحہ بہ لمحہ کی صورتِ حال کی مانیٹرنگ کرتے رہے۔

پولیس کی جانب سے احتجاجی سرکاری ملازمین کو سیکریٹریٹ میں روک کر محدود کرنے کی کوشش کی گئی جس سے شاہراہِ دستور میدانِ جنگ بن گئی

اسلام آباد میں سرکاری ملازمین کے احتجاج پر پولیس کی شیلنگ

شاہراہِ دستور پر پارلیمنٹ ہاؤس اور سپریم کورٹ سمیت متعدد اہم سرکاری عمارات واقع ہیں۔

پولیس کی جانب سے 2 درجن وفاقی ملازمین کو 16 ایم پی او کے تحت گرفتار کیا گیا ہے۔

وفاقی وزیرِ اطلاعات و نشریات سینیٹر شبلی فراز وہاں سے گزرے تو مظاہرین نے انہیں گھیرے میں لے لیا۔

مریم نواز نے سرکاری ملازمین کی حمایت کا اعلان کردیا

مریم نواز نے کہا کہ پہلی حکومت ہے جس نے چار گنا مہنگائی کے باوجود تین سال میں سرکاری ملازمین کی تنخواہ میں ایک روپے کا اضافہ نہیں کیا۔

پولیس کی جانب سے 50 کے قریب ملازمین کو حراست میں لے لیا گیا ہے جن کے بارے میں پولیس کا کہنا ہے کہ ان کے خلاف مقدمے کا اندراج نہیں کیا جائے گا۔

دوسری جانب حکومت کی طرف سے کسی وزیر یا عہدے دار نے سرکاری ملازمین سے مل کر ان کے مطالبات سننے اور مذاکرات کرنے کی کوشش نہیں کی ہے۔

بعض ذرائع کا کہنا ہے کہ سرکاری ملازمین کے احتجاج کرنے اور دھرنا دینے کے بعد وفاقی حکومت نے ان کے مطالبات تسلیم کرنے اور گریڈ 1 تا 16 کی تنخواہوں میں 25 فیصد اضافے پر غور شروع کر دیا ہے۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *