Categories
Breaking news

اسلاموفوبیا کے خاتمے کیلئے اجتماعی کاوشوں کی ضرورت ہے:عمران خان

جنگ نیوز

وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ شدت پسندی کو اسلام سے جوڑنے سے مسلمان متاثر ہوتے ہیں،اسلاموفوبیا کے خاتمے کے لئے اجتماعی کاوشوں کی ضرورت ہے۔

وزیراعظم نے او آئی سی ممالک کے سفیروں سے گفتگو میں کہا کہ اسلاموفوبیا سے بین المذاہب نفرت کو ہوا ملتی ہے، پاکستان بین المذاہب ہم آہنگی کی کوشش کررہا ہے۔

وزیراعظم کا مغربی ممالک سے نبیﷺ کی شان میں گستاخی پرسزا کا مطالبہ

وزیراعظم عمران خان نے مغربی ممالک سے نبیﷺ کی شان میں گستاخی پرسزا کا مطالبہ کردیا۔

انہوں نے کہا کہ دہشتگردی کا کوئی مذہب نیں ہوتا، او آئی سی اسلام کےصحیح تشخص کو اجاگر کرنے اورعالمی سطح پر آگاہی پیدا کرنے کے لئے کردار ادا کرے۔

وزیراعظم عمران خان سے اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) کے رکن ملکوں کے سفیروں کی ملاقات کی، ملاقات میں وزیراعظم نے اسلامو فوبیا کے خاتمے کیلئے عالمی سطح پر پاکستان کی کاوشوں سے آگاہ کیا۔

یہ بھی پڑھیے

انہوں نے کہا کہ اظہاررائے کی آزادی کی آڑمیں توہین رسالت ﷺ سے ڈیڑھ ارب مسلمانوں کی دل آزاری ہوتی ہے، او آئی سی اس حوالے سے عالمی سطح پر آگاہی پیدا کرنے میں کردارادا کرے۔

عمران خان نے تمام مذاہب کے افراد کی دل آزاری روکنے کیلئے قانونی اقدامات پر زور دیتے ہوئے کہا کہ او آئی سی اسلام کے صحیح تشخص اور امن کے پیغام کو اجاگر کرے۔

تحریک لبیک کے چیلنج کی انسداد دہشتگردی قوانین کے تحت کاروائی کی گئی، وزیراعظم عمران خان

وزیراعظم پاکستان عمران خان کا کہنا ہے کہ تحریک لبیک نے ریاست کی رٹ کو چیلنج کیا تو اس کے خلاف انسداد دہشتگردی قوانین کے تحت کاروائی کی گئی۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان دنیا میں برداشت کے فروغ کیلئے عالمی برادری سے تعاون کیلئے پرعزم ہے۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *