Categories
Breaking news

اسامہ ستی کیس کے ملزمان کا مزید جسمانی ریمانڈ منظور

Advertisement

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ اسلام آباد نے پولیس کے انسدادِ دہشت گردی اسکواڈ کی فائرنگ سے قتل ہونے والے 21 سالہ نوجوان اسامہ ستی کے کیس کے ملزمان کا مزید 2 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کر لیا۔

انسدادِ دہشت گردی عدالت میں آج چھٹی ہونے کے باعث ملزمان کو ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج کے روبرو پیش کیا گیا۔

ہم تب مطمئن ہوں گے جب قاتلوں کے خلاف کارروائی ہوگی، والد اسامہ

والد اسامہ ستی نے کہا کہ 2018 میں بیٹے پر کیس تھا تو پہلے کیوں نہیں دیکھا گیا، پولیس پر بات آئی ہے تو یہ کیس چھیڑا گیا ہے۔

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج طاہر محمود نے اسامہ ستی کے قتل کے ملزمان کا مزید 2 روز کا جسمانی ریمانڈ منظور کر لیا۔

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ اسلام آباد نے ملزمان کو 2 روز بعد انسدادِ دہشت گردی عدالت میں پیش کرنے کا حکم بھی دیا۔

یہ بھی پڑھیے

واضح رہے کہ اسلام آباد پولیس نے 2 دسمبر کی شب نوجوان اسامہ کو 22 گولیاں مار کر بڑی بے رحمی سے قتل کر دیا تھا۔

نوجوان کے قتل کے ذمے دار 5اہلکاروں کو گرفتار کر کے ان کے خلاف دہشت گردی کامقدمہ درج کیا گیا تھا۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Advertisement

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *