Categories
Breaking news

ابوظہبی کی ایک فیملی نے بیٹے کے اعضاء پاکستان کو عطیہ کیے، یاسمین راشد

ابوظہبی کی ایک فیملی نے بیٹے کے اعضاء پاکستان کو عطیہ کیے، یاسمین راشد

وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد کا کہنا ہے کہ ابو ظہبی سے آنے والے گردے اور جگر سے لاہور کے 2مریضوں کا کامیاب ٹرانسپلانٹ کیا گیا ہے، وزیر صحت نے اس خواہش کا اظہار کیا کہ وہ جب بسترِ مرگ پر ہوں تو اُن کے جو اعضاء کام کررہے ہوں انہیں کسی کی زندگی بچانے کے لئے استعمال کرلیا جائے۔

وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشدنے پاکستان کڈنی اینڈ لیورٹرانسپلانٹ انسٹی ٹیوٹ لاہورمیں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ پہلی دفعہ ہوا ہے کہ ماں باپ نے بچے کے اعضا عطیہ کیے ہیں، میرےخیال سےاس سےبڑی قربانی کاذکرنہیں ہوسکتا۔

انہوں نے بتایا کہ ابوظہبی کی ایک فیملی نے اپنے بیٹے کے انتقال سے چند منٹ پہلے بڑا قدم اٹھاتے ہوئے اس کا جگر اور گردہ پاکستان کو عطیہ کر دیا، وہ اس فیملی کی شکر گزار ہیں، آج ان کی وجہ سے 2 لوگوں کی جان بچ گئی ہے۔

ڈاکٹر یاسمین راشد نے اس خواہش کا اظہار بھی کیا کہ وہ جب بستر مرگ پر ہوں تو ان کاجو آرگن کام کررہا ہو، وہ کسی کی جان بچانے کے استعمال میں لایا جائے ۔

ان کاکہنا تھا کہ پی کے ایل آئی اسپتال میں بون میروٹرانسپلانٹ شروع کر رہے ہیں،اسپتال کو مکمل طورپر فعال کرنےکی کوشش کر رہے ہیں،اسے ٹیچنگ انسٹی ٹیوشن بنائیں گے، یہ اسپتال باقاعدہ طورپر ٹیچنگ اسپتال ہوگا

وزیر صحت نے بتایا کہ حکومت کی کاوش سے آج یہ اسپتال اسطرح چل رہا ہے جس مقصد کیلئے بنایا گیا تھا،یہاں اب تک 231 سے زائد کڈنی ٹرانسپلانٹ ہو چکے ہیں،یہ اسپیشلائزڈ انسٹی ٹیوشن ہے، جہاں سب اسپیشلیٹیز بنانے جا رہے ہیں۔

وزیر صحت پنجاب نے کہا کہ وہ لوگوں کوصحت کی سہولتیں فراہم کرنے کے لئے دن رات کام کررہی ہیں، اپوزیشن اگر بول رہی ہے تو اس سے ثابت ہوتا ہے کہ اپوزیشن کو ان کے کام سے تکلیف ہے۔

انہوں نے کہاکہ خون دے کر لوگوں کی زندگیاں بچائی جاتی ہیں کیا وہ بھی حرام ہے۔

قومی خبریں سے مزید

Original Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *