Categories
Breaking news

ابوظبی میں آنے والے سیاحوں کو کووِڈ-19کی ویکسین مفت لگانے کی پیش کش

متحدہ عرب امارات کے دارالحکومت ابوظبی نے سیاحوں کو کووِڈ-19 کی ویکسین مفت لگانے کی پیش کش کی ہے۔اس سے پہلے صرف یواے ای کے شہریوں اور اقامتی ویزے کے حاملین کو مفت ویکسین لگائی جارہی تھی۔فوری طورپر یہ نہیں بتایا گیا ہے کہ آیا اس نئے فیصلے کااطلاق سب سے زیادہ آبادی والی امارت دبئی یایواے ای کے وفاق میں شامل باقی پانچ امارتوں پر بھی ہوگا۔ابوظبی کی ہیلتھ سروسز کمپنی نے ایک اعلامیے میں بتایا ہے کہ اس امارت کے جاری کردہ ویزے اور پاسپورٹ کے حامل افراد اگر سیاحتی ویزے پرابوظبی میں آتے ہیں تو وہ مفت ویکسین لگوانے کے لیے اپنے ناموں کا اندراج کراسکتے ہیں۔

قبل ازیں ابوظبی کے میڈیا دفتر نے یہ اطلاع دی تھی کہ زایدالمیعاد اقامتی اور داخلے کے ویزے کے حاملین مفت ویکسین لگوانے کے اہل ہیں۔واضح رہے کہ کرونا وائرس کی وبا کے تعلق سے عاید کردہ سفری پابندیوں کے نتیجے میں یو اے ای میں کام کرنے والے بہت سے افراد اپنے آبائی ممالک سے لوٹ نہیں سکے ہیں اور ان کے اقامتی ویزوں کی مدت ختم ہوچکی ہے یا وہ کارآمد نہ رہنے کی وجہ سے اماراتی حکام نے منسوخ کردیے ہیں۔

یو اے ای کے محکمہ صحت نے اسی ماہ کہا تھا کہ اہل آبادی میں سے قریباً 85 فی صد افراد کو ویکسین کی ایک خوراک لگائی جاچکی ہے لیکن اس نے یہ نہیں بتایا تھا کہ کتنے لوگوں کوویکسین کی دونوں خوراکیں لگ چکی ہیں۔یواے ایک میں گذشتہ ایک ماہ کے دوران میں ایک مرتبہ پھر کرونا وائرس کے یومیہ کیسوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے اور ابوظبی میں داخل ہونے والوں پر ابھی تک گھروں میں قرنطین میں رہنے اور وقفے وقفے سے پی سی آر ٹیسٹ کرانے کی پابندی عاید ہے۔دوسری امارتوں سے ابوظبی میں آنے والے لوگوں پر بھی پی سی آر ٹیسٹ کی منفی رپورٹ دکھانا لازم ہے۔

چین ، جرمنی اور امریکا سمیت 27 ممالک سے تعلق رکھنے والے مسافرابوظبی میں قرنطین کی شرط کے بغیر آسکتے ہیں۔ابوظبی میں چین کے سرکاری ملکیتی دواساز ادارے سائنوفارم اور فائزر اور بائیواین ٹیک کی ویکسین لگائی جارہی ہے۔چند ماہ ماہ پہلے سائنوفارم ویکسین لگوانے والوں کو اب فائزر،بائیو این ٹیک کی ویکسین کی اضافی خوراک لگائی جارہی ہے۔

واضح رہے کہ یو اے ای میں شامل آبادی کے لحاظ سے دوسری بڑی امارت ابوظہبی نے 15 جون سے شاپنگ مالز، ریستوران، کیفے اور دیگر عوامی مقامات تک رسائی صرف ان لوگوں تک محدود کردی ہے جنھیں کووِڈ-19 کی ویکسین لگ چکی ہے یا جن کا حال ہی میں پی سی آر کا منفی ٹیسٹ کیا گیا ہے۔

اگر کسی فرد کو کرونا وائرس کی ویکسین لگ چکی ہے توسرکاری موبائل ایپ اس کو سبز رنگ سے ظاہر کرتی ہے اگر اس شخص کے پی سی آر کی رپورٹ منفی ہے تو وہ بھی سبز رنگ سے ظاہر کرتی ہے۔جن افراد کو ابھی تک ویکسین کی کوئی خوراک نہیں لگی ہے،انھیں اپنی سبز حیثیت برقرار رکھنے کے لیے ہر تین دن کے بعد ٹیسٹ کرانے کی ضرورت ہے اور ویکسین کی دونوں خوراکیں لگوانے والے شخص کو ہر 30 دن کے بعد ایپ پر اپنی سبز حیثیت کی تصدیق کرنا ہوگی۔

متحدہ عرب امارات میں حکومت کی جانب سے آسٹرازینکا، فائزر/بائیو این ٹیک، سائنوفارم اور اسپوتنک پنجم ویکسینیں لگائی جارہی ہیں۔اس وقت وہ شہریوں اور مکینوں کو ویکسین لگانے کی شرح کے اعتبار سے دنیا میں سب سے پہلے نمبر پر ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *