Categories
Breaking news

آؤٹ ڈور ماسک پر پابندی ختم ،مگر لوگوں کا رویہ کیا رہا؟

میڈرڈ (محمد نبی) ایک سال کی سخت پابندی کے بعد ہفتے کو اسپین نے ماسک پہنے کی پابندی میں نرمی کا اعلان کرتے ہوئے آؤٹ ڈور ماسک پر پابندی ہٹا دی تھی۔ اس اقدام کے بعد جہاں تک سماجی فاصلوں کا برقرار رکھا جا سکتا ہے، آؤٹ ڈور ماسک پہننا لازم نہیں ہوگا۔ ملک بھر میں ماسک پہننے کے حوالے مختلف رویے سامنے آئے ہیں۔ کئی لوگ بغیر ماسک کے گھومتے پھرتے رہے۔ جب کہ دوسری طرف لوگوں کی ایک بڑی تعداد نے چھوٹ کے باوجود ماسک پہن رکھے تھے۔

بارسلونا کے Vila de Gràcia میں درجنوں افراد آدھی رات کا بے چینی سے انتظار کرتے رہے۔ جیسے ہی گھڑی نے 12 بجے کی گھنٹی خبر دی، انہوں نے چیخ و پکار میں اپنے اپنے ماسک بلندی کی طرف اچھال دئے۔ ویرونیکا ایموت (Verónica Amot) نے اس موقع پر کہا “مجھے اس کو اتار پھینکنے کا انتظار تھا۔ لیکن مجھے خوف بھی ہے۔ میرے والد کا کورونا وائرس سے انتقال ہوا تھا۔ مجھے کچھ تحفظات بھی ہیں۔”

اس مقام پر ایک دوسرے شخص کا کہنا تھا “میں اس کو کچھ اور ہفتے استعمال کروں گا۔ کورونا کا خاتمہ نہیں ہوا اور وبا میں کسی بھی وقت دوبارہ ابال آسکتا ہے۔”
دریں اثنا ماسک پابندیوں مین نرمی کچھ حدود و قیود کے ساتھ لائی گئی ہے۔ اندرون طور پر ماسک کا استعمال اب بھی لازم ہوگا۔ علاؤہ ازیں جن مقامات پر سماجی فاصلہ جو 1.5 میٹر کا ہے، برقرار رکھنا ممکن نہ ہو، وہاں پر ماسک پہننا لازم ہوگا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *